Home / Islamic Wazaif / Girl Friend

Girl Friend

اسلام میں عورت کو بہت عزت کا مقام دیا گیا ہے، عورت کا ہر روپ (ماں بہن بیٹی، بیوی) خوبصورت اور قابل احترام ہے
مگر آجکل بدقسمتی سے ہمارے معاشرے میں عورت سے ایک اور غلط رشتہ جوڑ دیا گیا ہے جسے گرل فرینڈ کہتے ہیں۔
یہ ایک انتہائی غلیظ رشتہ ہے، ہر شریف لڑکی ایسے گھناؤنے رشتے سے دور رہتی ہے اور ہر شریف لڑکا اس رشتے کو نفرت کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔
ایک بات ہمیشہ یاد رکھئے گا کہ لڑکیاں اپنی عزت و وقار کے ساتھ ہی اچھی لگتی ہیں کسی لڑکی کے لئے اس سے بڑھ کرذلت کی کیا بات ہو گی کہ کوئی مرد محض اپنے وقت کو رنگین بنانے کے لئے اسے استعمال کر رہا ہو۔
مرد جس لڑکی کو اپنی عزت بنا کر اپنے گھر لے کر جانا چاہتا ہو اسے لے کر وہ کبھی ہوٹلوں یا پارکوں میں نہیں گھومتا، اسے وہ بیوی بناتا ہے گرل فرینڈ نہیں۔۔۔
اور اس کے لئے باعزت راستہ اختیار کرتا ہے ایک شریف لڑکا جو آپ کو سچ میں پسند کرتا ہوگا وہ لڑکی کے گھر اپنے والدین کو بھیج کر عزت سے رشتہ مانگے گا
جو لڑکا یا مرد آپ سے صرف گرل فرینڈ کا رشتہ رکھنا چاہتا ہے تو اس لڑکے یا مرد سے دور رہیں۔
جو آپ کو جائز مقام نہیں دے سکتا اس کی نظروں میں اپنی ماں بہن کی بھی کوئی عزت نہیں ہوگی۔
اوباش لڑکے معصوم لڑکیوں کو پھنسا کر ان کی عزت سے کھیلتے ہیں اور ان نادان لڑکیوں کو ہوش تب آتا ہے جب پانی سر سے اونچا ہو چکا ہوتا ہے۔
خدانخواستہ اگر آپ ایسے کسی مرد کے جھانسے میں آ جاتی ہیں اور ناجائز تعلقات قائم کر لیتی ہے تو یہ مت بھولیں کہ اگر وہ انسان اچھا نہ ہوا تو کل کو سارا خمیازہ آپ کو بھگتنا پڑے گا۔
کیونکہ ہمارے معاشرے میں مردوں کی کی گئی غلطی قابل معافی ہوتی ہے مگر لڑکی کوئی غلط قدم اٹھا لے تو معاشرہ تو معاشرہ لڑکی کے اپنے گھر والے تک ساتھ دینے سے انکار کردیتے ہیں۔
اور ایسی صورت میں زبردستی شادی کروائی جاتی ہے، اور پھر ایسی صورت میں سسرال والے ایسی بہو کو دل سے قبول نہیں کرتے یہ ہمارے معاشرے کی ایک تلخ سچائی ہے۔
ایسا نہیں ہے کہ میں صرف مردوں کے خلاف ہوں بلکہ اگر کوئی لڑکی بھی ایسا کھیل کھیلتی ہے تو اس پر بھی اتنی ہی شریعت اور اخلاقیات کی حدود ہیں۔
آج کل ہمارے معاشرے میں لڑکیاں بھی ایسا کرتی ہیں تھوڑے سے پیسوں کے لیے کسی رتبے کیلئے، جاب کیلئے، ترقی کے لئے یا ٹائم پاس کے لیے لڑکوں سے محبت کا ناٹک کرتی ہیں۔ بعض اوقات تو شادی شدہ مردوں کو بھی اپنی جھوٹی محبت کا نشانہ بنا کر ہستی بستی شادی شدہ زندگی کو تباہ کر دیتی ہیں اور ان کے بیوی بچوں کا حق مار دیتی ہیں۔
ان بہنوں سے بھی یہ گزارش ہے کہ براہ مہربانی نیٹ ، فون پر لڑکوں سے رشتہ داریاں نہ بنائیں۔
نہ ہی ان کو اپنے فوٹو وغیرہ دکھائیں ، ضرورت ہی کیا ہے آخر خود کو نمائش کے لئے پیش کرنے کی؟
کیا آپ کو ہونے والے نقصانات کا اندازہ ہے؟ جو کل آپ کی آنے والی زندگی کو تباہ کرسکتے ہیں؟؟؟
اپنی تصاویر اپنی فیملی کے لیے رکھیں، نیٹ پر ان تصاویر کا بنا اجازت کاپی کر کے غلط استعمال بھی ہو سکتا ہے اور آپ کو خبر تک نہیں ہوتی۔
لڑکے اور لڑکیوں کی وقتی محبت اورٹائم پاس کے چکر میں دی گئی تصاویر اور ویڈیوز کوسیو کر لیا جاتا ہے۔
اور پھر مطلب پورا ہوتے ہی انہیں بلیک میل کر کے غلط کام کرنے پر مجبور کیا جاتا ہے اور اس نتیجے میں کئی لڑکیوں نے خودکشی بھی کی۔
میں مانتی ہوں کہ اس سب چکر میں صرف لڑکے ہی نہیں لڑکیاں بھی برابر کی ذمہ دار ہیں۔
لیکن یہ بھی حقیقت ہے کہ 80 فیصد لڑکیاں صرف شادی کے نام پہ ایمان بیچ دیتی ہیں۔ وہ یہی سمجھتی ہیں کہ یہ لڑکا مجھ سے سچی محبت کرتا ہے اور مجھے ہی اپنی بیوی بنائے گا۔
ان بہنوں کے لئے بھی ہاتھ جوڑ کر استدعا ہے کہ پیاری بہنوں غلطی ہو گئی ہے اگر اسلام کی حدود کو کسی حلال رشتے میں بندھنے کے لیے پامال کر ہی دیا ہے تو بھی اپنے آپ کو سدھارو، ایمان نہ بیچو، پردہ نہ اتارو، اس کو سیدھے طریقے سے گھر بلاؤ
اور یقین کرو جسے تم سے محبت ہے وہ تمہارا ایمان خراب کرے گا بھی نہیں اور جو کر رہا ہے اس کو محبت ہے ہی نہیں۔
ایک لذت ہے، اشتہا ہے، ہوس ہے اور تجسس ہے، تمہیں کھوجنے کا، اس سے دور رہو اور اس کو دور کر دو۔
خدارا اپنی عزت کو، ایمان کو، کم داموں میں مت بیچو، یہ وہ موتی ہیں جو انمول ہیں ان کو پتھر نہ کرو، کسی کے لیے رب کو ناراض کروں گی تو رب کی پکڑ اور آزمائش بہت شدید ہے۔
اور پھر ایسے میں آجکل کے لڑکے اور لڑکیاں ہر کسی کو کہتے پھرتے ہیں کہ دل کو سکون نہیں سکون کیسے ہو جب اللہ تعالی کو ہی ناراض کر دیا ہو۔
بہت لمبی بحث میں نہ جاتے ہوئے بس اتنا ہی کہنا چاہوں گی کہ آپ مسلمان ہو، یہ غیر مسلم قوموں کا فعل اختیار نہ کرو، جو اخلاقی پستیوں میں گر کر تباہ ہوچکی ہیں۔
اس مغربی کلچر کی یلغار کا مقصد صرف اور صرف ہماری روحانی تباہی ہے تاکہ ہم بھی صرف اس مادی دنیا کے بھنور میں پھنس کر رہ جائیں۔
اس لئے میری بہنو اپنے آپ کو ایسا چاند نہ بناؤ جس پر ہر کسی کی نظر پڑے، بلکہ ایسا سو رج بنو جس پر نظر پڑتے ہی جھک جائے۔
اور دعا کیجئے کہ یا رب العزت ہم سب کو ایک ایسی اچھی بیٹی بہن بیوی اور ماں بننے کی توفیق دے جس سے اللہ اور اللہ کا پیارا حبیب صلی اللہ علیہ وسلم راضی ہوں
آمین یا رب العالمین
اردو سینٹر پلس

About admin

Check Also

چارمعصوم بیٹیوں کا قاتل کون؟

چارمعصوم بیٹیوں کا قاتل کون؟

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *