Home / Duas / Tauba Ki Azmat

Tauba Ki Azmat

 اس دنیا میں جو بھی کرے گا چاہے اچھا ہو یا برا اس کا بدلہ ملے گا ٹھیک ہے تو اصل میں دنیا میں کھیلے گئے نیک اعمال کے انعامات اور برے اعمال کی سزائیں تو آخرت میں ہی ملیں گے لیکن اللہ کی دنیا اندھیر نگری نہیں ہے جہاں انسان جو کچھ بھی کرتا ہے چاہے وہ اچھا ہو یا برا اس کی سزا اور جزا اب اس دنیا میں بھی ملتی ہے انسان کو جھنجھوڑنے کے لیے اس کو سبق سکھانے کے لئے راہ راست پر لانے کے لیے کسی کو مقامات عمل کہتے ہیں ہیں یہ دنیا جائو قاتل ہے یہاں ہر شخص ہے لوٹ کر واپس آتی ہے چاہے وہ بولے گئے الفاظ ہو کسی کو کسی کے ساتھ بھلائی ہو کسی کے ساتھ کی ہوئی نیکی ہو یا کسی کے ساتھ کی افطاری انسان یہاں جو ہوتا ہے وہی کرتا ہے ہے آج آپ تو آنے والے وقت میں وہ آپ کی راہ میں پہاڑ جائے گا یاد رکھیں یہ دنیا مکافات عمل ہے جب آپ کسی کو نقصان پہنچاتے ہو ہو کسی کو تکلیف دیتے ہو تو اسی محنت کے ساتھ میں سیکنڈ میں آپ کا کام ڈاؤن شروع ہو جاتا ہے ہے آپ سے آپ ایک ایسی کہانی ہے جو لکھتے ہیں اور آپ بھی پڑھ کے سناتی ہے ہے جیسی محبت آپ اپنے ماں باپ سے کریں گے ویسی ہی محبت آپ کو اپنی آنے والی اولاد سے ملے گی گی شامل ایک حقیقت ہے ہے سمجھ میں آجائے تو ٹھیک ہے نہیں تو نکاح عمر ہے ہے تمہیں تکلیف سے کرلو مگر اس وقت جب تمہارے دل سے اتر چکے ہوں گے کیونکہ وہ تمہاری قدر سے نہیں آتا ویسے روتے ہیں جس سے تم آج رو رہے ہو وہ کل تمہارے پچھتاوے میں شامل ہے ہے میں ان لوگوں کے گروپ میں ہمیشہ حیران ہوتی ہوں جو اللہ کے بندوں سے اللہ کے سامنے زیادتی کرتے ہیں یہ جانتے ہوئے بھی کہ وفا کر عمل بھی کسی چیز کا نام ہے کہ جو دیکھ رہا ہے اور سزا بھی دے گا گا میرا ماننا یہ ہے کہ اگر ہم کسی بھی انسان کے لئے آسانیاں پیدا کرنے کا باعث نہیں بن سکتے تو ہمیں مشکلات پیدا کرنے سے بھی اجتناب کرنا چاہئے اللہ کو اپنے بندوں سے بہت پیار ہے وہ اپنے بندوں سے رائی کے برابر بھی زیادتی کا حصہ لیتا ہے ہے وہ اپنے بندے کی بےعزتی بھولتا نہیں ہے اور نہ ہی اس کو بولتا ہے عمل سے بہت پیار ہے صرف سن کر ایک جیسا کرے گا ویسا ہی آئے گا جو دوسروں کے لئے درد کی وجہ کرتے ہیں کسی نہ کسی طرح سے تکلیف ان پر پلٹا دی جاتی ہے یہ میرے اللہ کا قانون ہے یہی مکافات عمل ہے مگر وہ سمجھتے نہیں ہے ہے زبان دراز لوگوں سے کرنے کا کوئی فائدہ نہیں وہ تو بول ہی نکال لیتے ہیں لیکن روح ان لوگوں سے جو سہ جاتے ہیں خاموش ہوجاتے ہیں کیونکہ وہ معاملہ اللہ کے سپرد کردیتے ہیں جہاں ناانصافی کی وہ دن ہے اور اندھیرے کبھی نہیں اگر انہوں نے کچھ کہا نہیں ہے میں کچھ کیا نہیں ہے تو بدلے میں اللہ ضرور کرے گا گا زندگی میں اگر آپ کے انتہائی عزیز اور قریبی لوگ بھی آپ سے اکتا جائیں آپ کے خلاف ہو جائیں تب بھی اگر آپ صبر سے کام لیں اور اللہ پاک پر کامل بھروسہ رکھیں تو اللہ پاک آپ کو وہ مقام عطا کریں گے کہ زمانہ دیکھتا رہ جائے گا میں روشنی اور نور کے خزانے اپر کھول دیئے جائیں گے اور جس اذیت اور قرض سے آپ گزر رہے ہیں کبھی نہ بیبی اس سے زیادہ اذیت میں اس زیادتی کرنے والے انسان کو مبتلا کردیا جائے گا گا اللہ پر بھروسہ رکھیں آپ کی ہوئی اور تکلیف میں گزرا ہوا کوئی بھی دے کبھی رایگان نہیں جاتا آپ سے صبر سے عمل کا انتظار کریں کبھی کبھی میں سوچتی ہوں کہ تم میرے پرخلوص جذبات کا قرض کس طرح اتارو گے میں نے جتنے الفاظ پر سے کہے اور تم نے نظر انداز کر دیے رہی ہو تم میرے اور تمہیں پتا ہے کہ روپے پیسے کے مقروض کبھی نہ کبھی دس اتار لیتے ہیں لیکن کسی کے جذبات کے باتوں کے مقروض کبھی قرض نہیں اٹھا سکتے ہو تم میرے مجھے نہیں دے رہی لیکن میں چاہتی ہوں کہ اللہ پاک اسے خوبصورت بیٹی سے نوازے وہاں سے لاڈو سے کال کر بڑا کرے اور پھر اس کی بیٹی کو کسی شخص سے محبت ہو جائے اور وہاں سے ہزاروں خواب دکھائے اور جب خوابوں کو تکمیل کرنے کا وقت آن پہنچی تو شخص خاموشی سے راستہ بدل کر کسی عورت کا ہاتھ تھام لے اور کبھی واپس کرنا دے کے کے کھڑا اپنی بیٹی کو تڑپتا دیکھے اور پھر اس کے ذہن میں صرف اور صرف میرا نام نقش ہو اور اس کی آنکھوں میں لئے وظیفہ اس کو احساس دلائے کہ دنیا مکافات عمل ہے کسی لڑکی کے دوست ہونے کے خواہشمند حضرات اور خود کسی لڑکی کے باپ بن جائیں گے گے آج اپنی ماں کو دھوکہ دینے والی لڑکی کو دیکھ کر بھوک اس کی کی آج تم کسی کے خاندان کی عزت کا خیال نہیں رکھو گے تو کل تمہارے ساتھ بھی یہی ہو گا گا گی اجڑی کی نکڑ پر کسی کی بہن کو چھوڑو گے اور دوسروں پر تمہاری بہن کو کوئی چھیڑ رہا ہوگا گا اگر آج 770 کسی کی بیٹی کو بڑھا کر گھر لاتے ہیں اور اس کی دل آزاری کرتے ہیں تو یاد رکھیں کل کو ان کی بیٹی بھی کسی اور کے گھر پہ ہوں بن کر جائیگی ترجمان دے گا پورے پاک کا گریبان پکڑ سکتا ہے اس کا بیٹا بھی اس کا گریبان پکڑے گا پلٹ کر واپس نہیں آتا لیکن کسی کے ساتھ کی گئی اچھائی اور برائی ضرور واپس پلٹ کر آتی ہے اور یہی قدرت کا قانون کی ہے ہے جلے جس نے برسوں جس میں ہم انہیں اس آگ میں جلنا ہی ہوگا ہماری راہ میں کانٹے بچھائے تھے تم نے پر تمہیں چلنا ہی ہوگا ہمارے عشروں پے ہنستے رہے تو ہماری اشکوں سے ہنستے رہے تم کیا جانو تم نے وہ بھرنا ہی ہوگا ذرا دیکھو رضا2 جلایا جس نے ہم کو اب اسے جلنا ہی ہوگا 




About admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *